Entertainment

یہ کیسا بھکاری ہے

یہ کیسا بھکاری ہے
تحریر: چودھری عرفان الخالق ،،،
صاحب جی اللہ آپ کا بھلا کرے میرے بچے 2 دن سے بھوکے ہیں اور کچھ کھانے کو نہیں آپ 50 روپے دے دیں آپ کے بچے کبھی بھوکے نہ سوئیں
مبشر نے پیچھے مڑ کر دیکھا تو ایک نہایت ہی خستہ کپڑوں میں ملبوس ایک ٹانگ سے معذور بھکاری اس کی طرف التجایہ انداز میں دیکھ رہا تھا
مبشر نے جیب سے 100 کا نوٹ نکال کر اس کے ہاتھ میں تھما دیا
یار تم نے 100 روپے کا نوٹ بغیر سوچے اس کو دے دیا ہوسکتا ہے وہ جھوٹ بول رہا ہو ایوب نے قدرے ڈانٹ کر مبشر کو کہا
ان دونوں کی باتیں قریب کھڑے ظفر نے سنی تو وہ ان کی طرف متوجہ ہوا اور کہا کہ میں اس بوڑھے معذور بھکاری کو جانتا ہوں یہ تو ایک نمبر کا دھوکے باز ہے اس کے 2 جوان بیٹے ہیں اور یہ معذور بھی نہیں ہے
یہ سالانہ عرس پہ چائے کا ٹھیلا لگاتا ہے اس کے بیٹے اچھا خاصا کماتے ہیں اور گھر میں ایک بوڑھی ماں ہے اور گھر بھی خوب ہے
لیکن یار اس کی ٹانگ تو کافی زخمی اور جلی ہوئی ہے مبشر نے جھٹلاتے ہوئے ظفر کو کہا
ظفر نے بات کو آگے بڑھاتے ہوئے کہا کہ اگر تم چاہو تو میں تمہیں اس کے گھر لے جا سکتا ہوں اور اس کے بیٹوں سے تمہاری ملاقات بھی کروا دوں گا اور تو اور اس کی معذوری ابھی یہاں سب کے سامنے نکالتا ہوں
ظفر نے یک دم شور مچا دیا وہ دیکھو اتنا بڑا سانپ اللہ توبہ اور بھاگ کھڑا ہوا اس طرف جس طرف وہ بوڑھا بھکاری جا رہا تھا
اسی شور شرابے سے اور لوگ بھی بھاگ کھڑے ہوئے
لیکن یہ کیا سب سے زیادہ سپیڈ میں دونوں ٹانگوں سے دوڑتا ہوا وہ بھکاری تھا ظفر نے بھاگتے ہوئے اسے جا لیا اور پکڑ کر پوچھا تم تو ایک ٹانگ سے معذور تھے لیکن اس وقت بوڑھے بھکاری کی زبان جیسے اس کے منہ میں نہیں تھی اور ساکت سب کو دیکھے جا رہا تھا اور اس سے کوئی جواب نہیں بن پا رہا تھا
یہ بھکاری بھی کیا بھکاری ہے
دوستو یہ ایک سچا واقعہ ہے جو آج سے تقریباً 18 سال پہلے کا ہے اور یہ سب میری آنکھوں کے سامنے کا ہے
نام اور کردار کی تبدیلی کے ساتھ لکھنے کا مقصد یہ ہے کہ ہر بھکاری کو مجبور مت سمجھیں یہ پیشہ ور بھکاری ہوتے ہیں
یہ اللہ کے نام پر مانگتے ہیں تو کچھ دیں ضرور لیکن زیادہ رقم اصل مستحق تک پہچانے کی کوشش فرمائیں
معاشرے میں ایسے بہت سے پیشہ ور بھکاری موجود ہیں جو مستحق کا حق مارتے پھر رہے ہیں انکو پہچانے اور مستحق کی مدد کریں
اللہ ہمیں سمجھنے کی توفیق عطا فرمائے آمین ثم آمین یا رب العالمین

Chaudhry Irfan-Ul-Khaliq

یااللہ ہمیں معاف فرما آمین

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button