Islamic

پارٹ نمبر 3قرآن پاک کا ایک صفاتی نام نصیحت ہے

پارٹ نمبر 3
ان آیات میں اللہ تعالیٰ نے قرآن پاک کو نصیحت کے نام سے پکارا ۔۔۔۔ 6۔ سورہ طہ۔آیات 98تا101۔پارہ 16
بے شک تمہارا معبود صرف اللہ ہے۔ اس کے سوا کوئی معبود نہیں ہے اور اس کا علم ہر چیز پر چھایا ہوا ہے۔ اسطرح ہم آپ سے وہ حالات بیان کیا کرتے ہیں۔ جو پہلے گزر چکے ہیں اور ہم نے آپ ؐ کو اپنے پاس سے نصیحت یعنی قرآن پاک دیا ہے۔ جو شخص اس سے منہ موڑے گا وہ قیامت کے دن ایک بوجھ اٹھائے گا اور وہ اس حالت میں ہمیشہ رہیں گے اور قیامت کے دن ان کا بوجھ اٹھانا ان کے لیے بہت برا ثابت ہو گا

خواتین و حضرات!
آپ نے دیکھا کہ اللہ تعالیٰ قرآن پاک کو نصیحت کہہ رہے ہیں اللہ تعالیٰ فرماتے ہیں کہ میں نے یہ قرآن دیا ہے۔یعنی قرآن پاک کی قد رو منزلت بیان کر رہے ہیں۔ اللہ تعالیٰ فرماتے ہیں کہ جو شخص بھی اس قرآن پاک سے منہ موڑے گا۔ وہ قیامت کے دن ایک بوجھ اٹھائے ہو گا اور وہ اس بوجھ کے ساتھ ہمیشہ رہے گا اور جس پر قیامت والے دن قرآن پاک سے منہ موڑنے کا بوجھ ثابت ہو گا تو یہ ان لوگوں کے لیے بہت برا ثابت ہو گا۔
7۔ سورہ نجم۔آیات 29تا30۔پارہ27
جو شخص نصیحت یعنی قرآن پاک سے منہ موڑتا ہے۔ آپ بھی اس شخص سے منہ پھیر لیجئے۔ جو دنیا کی ذندگی کے سوا کچھ نہیں چاہتا۔ ان لوگوں کے علم کی رسائی یہیں تک ہے۔ بلاشبہ آپ کا رب ہی خوب جانتا ہے۔ کہ کون اس کے راستے سے گمراہ ہو گیا ہے اور کون سیدھے راستے پر ہے۔

خواتین و حضرات!
آپ نے دیکھا کہ اللہ تعالیٰ فرما رہے ہیں کہ جو شخص نصیحت یعنی قرآن پاک سے منہ موڑتا ہے تو اے نبی ؐ آپ بھی ایسے لوگوں سے منہ موڑ لیجیے یہ لوگ دنیا کو چاہنے والے ہیں۔ ان لوگوں کا علم بس اتنا ہی ہے۔

خواتین و حضرات:۔
آپ نے دیکھا کہ اللہ تعالیٰ نبی کریم ؐ کو حکم دے رہیں ہیں کہ قرآن پاک سے جو منہ موڑتا ہے آپ ؐ بھی اس سے منہ موڑ لیجیے۔ جو لوگ قرآن پاک کی اطاعت چھوڑ کر صرف اس آس پر بیٹھے ہیں کہ رسول ؐ ان کی شفاعت کر دیں گے۔ ان کو یہ آیات بار بار پڑھنی چاہیے۔ شاید وہ اس آیت کو سمجھ جائیں اور قرآن پاک کی طرف واپس آ جائیں یعنی قرآن پاک سے رجوع کرلیں۔

8۔ سورہ یاسین۔آیات 10تا11۔پارہ نمبر22
ان کے لیے برابر ہے کہ آپ انہیں خبر دار کر یں یا نہ کریں۔ آپ ؐ تو صرف اسے خبردار کر سکتے ہیں جو نصیحت یعنی قرآن پاک کی اطاعت کر ے اور بغیر دیکھے اللہ تعالیٰ سے ڈرے۔ ایسے شخص کو بخشش اور بہترین اجر کی خوشخبری دے دیجیے۔

خواتین و حضرات!
آپ نے دیکھا کہ اللہ تعالیٰ قرآن پاک کو نصیحت کہہ رہے ہیں اور فرماتے ہیں کہ اے پیغمبر ؐ آپ صرف اسے خبردار کر سکتے ہیں جو اللہ تعالیٰ سے ڈرے اور قرآن پاک کی اطاعت کرے۔ ایسے شخص کو بخشش اور بہترین اجر کی خوشبخبری دے دیجئے۔

خواتین و حضرات!
آپ نے پچھلے بیان میں دیکھا کہ قرآن پاک سے منہ موڑنے والے کے لیے اللہ تعالیٰ کا حکم تھا کہ اے پیغمبر ان سے منہ موڑ لیجیے اور اس بیان میں قرآن پاک کی اطاعت کرنے والے کے لیے اللہ تعالیٰ نبی ؐ کو حکم دے رہیں ہیں کہ ایسے انسان کو بخشش اور عظیم اجر کی خوشخبری دے دیجئے۔

Part 2 

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button