Islamic

سمندر کی جھاگ برابر گناہ فوری معاف بس ایک مرتبہ پڑھ لیں

سمندر کی جھاگ برابر گناہ فوری معاف بس ایک مرتبہ پڑھ لیں امام اعظم ابو حنیفہ رحمتہ اللہ علیہ کی گریہ و زاری اور معافی مانگنے کا عجب معمول تھا. تب کے دور کے ایک بزرگ بیان کرتے ہیں. کہ میں کوفہ کی جامعہ مسجد میں اس ارادے سے رات بسر کرنے آیا کہ دیکھوں. کہ امام اعظم ابو حنیفہ رحمتہ اللہ علیہ کی شب بیداری کیسی ہوتی ہے. 

وہ فرماتے ہیں کہ اللہ کی قسم میں نے اپنی آنکھوں سے دیکھا کہ نماز عشاء پڑھنے کے بعد امام ابو حنیفہ رحمتہ اللہ علیہ گھر گئے. دن کو جو عالمانہ لباس پہنا ہوا تھا تبدیل کر کے اللہ کے حضور پیش ہونے کے لیے غلامانہ لباس پہنائے اور مسجد کے کونے میں کھڑے ہوگئے. اب ساری رات اپنی داڑھی کھینچتے رہے اور عرض کرتے رہے مولا ابو حنیفہ مجرم. اسے معاف کر دے. حضرت امام ابو حنیفہ رحمتہ اللہ علیہ کے بارے میں یہ بھی منقول ہے کہ وہ رو رو کر بے ہوش ہو جایا کرتے تھے. اور جب ہوش آتا تو عرض کرتے مولا اگر کے دن ابو حنیفہ رحمتہ اللہ علیہ بخشا گیا تو بڑے تعجب کی بات ہے. چنانچہ آپ بھی دوستوں معافی مغفرت, نصرت, رحمت کے لیے یہ دعا کے الفاظ زبانی یاد کر لیجی اس دعا کے الفاظ قرآن پاک میں سورہ بقرہ کی آیت نمبر دو سو چھیاسی میں موجود ہے.

لَا یُكَلِّفُ اللّٰهُ نَفْسًا اِلَّا وُسْعَهَاؕ-لَهَا مَا كَسَبَتْ وَ عَلَیْهَا مَا اكْتَسَبَتْؕ-رَبَّنَا لَا تُؤَاخِذْنَاۤ اِنْ نَّسِیْنَاۤ اَوْ اَخْطَاْنَاۚ-رَبَّنَا وَ لَا تَحْمِلْ عَلَیْنَاۤ اِصْرًا كَمَا حَمَلْتَهٗ عَلَى الَّذِیْنَ مِنْ قَبْلِنَاۚ-رَبَّنَا وَ لَا تُحَمِّلْنَا مَا لَا طَاقَةَ لَنَا بِهٖۚ-وَ اعْفُ عَنَّاٙ-وَ اغْفِرْ لَنَاٙ-وَ ارْحَمْنَاٙ-اَنْتَ مَوْلٰىنَا فَانْصُرْنَا عَلَى الْقَوْمِ الْكٰفِرِیْنَ۠(۲۸۶)

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button