Islamic

فرائض نماز

فرائض نماز: نماز پڑھنے کے کچھ فرائض بھی مقرر کیے گۓ ہیں، جن کا پورا کرنا ضروری ہے- یہ فرائض نماز کے اندر ہوتے ہیں- اگر ان میں سے ایک بھی رہ جاۓ، چاہے بھول سے یا جان بوجھ کر تو نماز نہیں ہوگی- ان کی کل تعداد سات ہیں ہے جو کہ یہ ہیں-

تکبیر تحریمہ: یعنی اللہ اکبر کہہ کر نماز کی شروعات کرنا-

قیام

قرائت کرنا

رکوع کرنا

سجدہ

آخری جلسہ یا قعدہ کرنا

سلام کے ساتھ نماز کو مکمل کرنا-

نماز کے فوائد

نماز سے کئی اخلاقی، تمدنی، معاشرتی، روحانی، جسمانی، سیاسی اور عسکری فوائد حاصل ہوتے ہیں- نماز روحانی اور جسمانی سکون حاصل ہوں کا بہترین ذریع ہے- نماز پڑھنا ایک ایسا عمل ہے، جس سے انسان کئی برائیوں اور گناہوں سے بچا رہتا ہے جیسا کہ الله تعا لیٰ قرآن مجید میں ارشاد فرمایا ہے:

ترجمہ : کچھ شک نہیں کے نماز ب حیائی اور برے اعمال سے روکتی ہے- نماز پڑھنے والا وقت کا پابند ہوتا ہے- نماز مساوات کا درس دیتی ہے اور امیر اور غریب کے درمیان فرق کو ختم کرتی ہے- نماز آپس میں محبت اور ہمدردی کا جذبہ ابھارتی ہے- نماز پڑھنے والا ہمیشہ صاف و پاک رہنے کا عادی ہو جاتا ہے اور نماز کی بدولت نمازی بہت سی اچھی عادتوں مثلا : سچ بولنا اختیار کرتا ہے، غیبت، چغلی، چوری اور دیگر برائیوں سے بچتا ہے اور نیکی کرنے کا عادی بن جاتا ہے- سب سے بڑھ کر یہ کہ نماز بندے اور اس کے رب کے درمیان تعلق کو مظبوط بناتی ہے-

اس سے علاوہ نماز پڑھنے سے : 1. نصب العین کی یاد دہانی 2. فرض شناسی 3. تعمیر سیرت 4. ضبط نفس 5. پابندی وقت 6. مساوات 7. اخوت و محبت 8. فلاح و بہبود امام کی اطاعت وغیرہ جیسے فوائد حاصل ہوتے ہیں- اگر ہماری بات کی جاۓ تو ھمارے سامنے اذان ہورہی ہو تو ہم نماز پڑھنے کے بجاۓ اپنے دنیاوی کاموں مے مشغول رهتے ہیں. نماز پر دنیاوی چیزوں کو ترجیح دیتے ہیں. اور جب کسی کام میں ہم پھس جاتے ہیں تو پھر الله کو یاد کرتے ہیں.

یاد رکھیں کے جب الله ناراض ہوتا ہے تو اللہ اپنے بندے کا رزق نہیں چھنتا، اس سے اپنی دی ہوئی نعمتیں نہیں چھنتا، بس اس سے سجدوں کی توفیق چھین لیتا ہے. اپ لوگ سوچے کے الله ہم سے ناراض ہوتو ہمارا گزارا ہوسکتا ہے کیا؟ اللہ کی ناراضگی کے ساتھ ہم خوش رہ سکتے ہیں؟ اگر جواب نہیں میں ہے تو ہمیں چاہیے کے ہم جب بھی اذان کی آواز سنے تو تمام دنیاوی کاموں کو روک کر ہم اپنے رب کے حضور کھڑے ہوں اور فرض نماز ادا کریں اور اپنے رب کو راضی رکھیں. اپنی دنیا اور آخرت سنوارے. بیشک الله اپنے بندوں سے بہت محبّت کرتا ہے.

Related Articles

One Comment

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button