Islamic

ایک بد چلن عورت کے مکرو فریب کا واقعہ

ایک بد چلن عورت کے مکرو فریب کا واقعہ. بنی اسرائیل کا یہاں ایک پہاڑ تھا جسے وہ بڑی عظمت والا سمجھتے تھے اور اس کی بہت عظمت و توقیر کرتے تھے. اور اگر کسی بات کا فیصلہ کرتے وقت قسم کھانے کی نوبت آتی تو اس پہاڑ پر چڑھ کر قسم کھاتے اور اسے وہ سچا سمجھ لیتے. شہر میں ایک خوبصورت عورت تھی جس کا ایک نوجوان سے ناجائز تعلق ہو گیا. عورت نے اس کو اپنے مکان میں بلانا شروع کر دیا.
شوہر کو شبہ پیدا ہو گیا. بیوی سے کہا کہ مجھے شبہ ہے کہ میری غیر حاضری میں کوئی تمہارے پاس أتا ہے۔ عورت نے انکار کیا۔شوہر نے کہا اگر تو سچی ہے تو پہاڑ پر چڑھ کر قسم کھا لے کہ تیرا کسی سے ناجائز تعلق نہیں. عورت نے کہا ہاں میں کل پہاڑ پر چل کر قسم کھانے کو تیار ہوں. ادھر اس نے اپنے اشنا سے کسی طرح چھپ کر یہ کہہ دیا کہ کل تم پہاڑ کے نیچے ایک گدھا لے کر کھڑے رہنا. میں اور میرا شوہر پہاڑ پر چڑھنے کے لیے وہاں آئیں گے اور میں شوہر سے کہوں گی کہ پہاڑ پر چڑھتے ہوئے تھک جاؤں گی. اس بہانے تمہارا گدھا کرائے پر لے کر میں اس پر سوار ہو کر پہاڑ پر چڑھوں گی. تم گدھے والے کے بھیس میں وہاں موجود رہنا اور گدھے پر مجھے سوار کر کے میرے ساتھ ساتھ چلنا.
چنانچہ جب دوسرے روز میاں بیوی پہاڑ پر چڑھنے کے لیے گھر سے نکلے اور چلتے چلتے پہاڑ کے پاس پہنچے تو وہاں اس کا اشنا گدھے والے کے بھیس میں گدھا لیے کھڑا ہوا تھا. عورت نے شوہر سے کہا چلتے چلتے میں تھک گئی ہوں مجھے یہ گدھا کرائے پر سواری کے لیے دو. شوہر نے گدھے والے سےقرایہ مقرر کیا اور بیوی کو گدھے پر سوار کر کے تینوں پہاڑ پر چڑنے لگے. جب وہ جگہ آئی جہاں لوگ قسمیں کھاتے تھے تو اس مکار عورت نے اپنے آپ کو گدھے سے نیچے گرا دیا. اور اس گرنے میں اپنی رانے وغیرہ قابل ستر بدن بھی برہنہ کر دیا. اور ایسی صورت پیدا کر دکھائی کہ شوہر نے یہی سمجھا کہ گدھے سے اتفاقا گر گئی اور گرتے ہوئے اتفاقا برہنہ ہوگئی ہے.
وہ جھٹ اٹھی اور اپنا لباس درست کر کے پہاڑ کی قسم کھانے والی جگہ پر کھڑی ہو کر کہنے لگی میں قسم کھاتی ہوں. میرے بدن کو آج تک تمہارے سوا اور اس گدھے والے کے سوا اور کسی نے نہیں دیکھا. شوہر مطمئن ہو گیا. کیونکہ اس نے یہ سمجھا کہ اس گدھے والے نے اسے گدھے سے گرتے ہوئے اس کا بدن اتفاقا دیکھا. تو دیکھا آپ نے عورت جب مکروہ فریب پر آجائے تو ایسی چالاکیاں دکھا کر شوہر کو بے وقوف بنا دیتی ہے. لیکن یہ پتہ نہیں کہ آج یہ گناہ کسی مکروہ فریب سے چھپا بھی لیا اور کسی کو پتہ بھی نہ چلا تو کل قیامت میں یہ بات نہیں چھپے گی. اس لیے کہ اللہ کو سب کچھ معلوم ہے. اللہ سے کوئی کام چھپا ہوا نہیں. دنیا والوں سے چھپ سکتا ہے لیکن اللہ تعالی سے نہیں چھپ سکتا اور اللہ کے نبی صلی اللہ علیہ وسلم نے اس کا عذاب بتا دیا کہ ایسی عورت سینے کے بل جہنم کے اندر جلے گی.

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button