Islamic

رسولﷺ وہ روشن چراغ ہیں ۔جو صرف اللہ تعالیٰ کی طرف بلاتے ہیں۔جواب قرآن پاک سے

ان آیات میں رسولﷺکو روشن چراغ کہا گیا ہے۔کیونکہ یہ روشن چراغ اللہ تعالیٰ کی طرف بلاتا ہے۔
) سورہ احزاب آیات 45تا48پارہ نمبر22
اے نبی ﷺہم نے آپ کو گواہی دینے والا اور خوشخبری دینے والا اور ڈرانے والا بنا کر بھیجا ہے اور اس کی اجازت سے آپ اللہ تعالیٰ کی طرف بلانے والے ہیں اوروشن چراغ ہیں اور ایمان والوں کو خوشخبری سنا دیجئے کہ ان پر اللہ تعالیٰ کی طرف سے بہت بڑا فضل ہے اور کافروں اور منافقوں کی اطاعت نہ کریں اور ان کی تکلیف دینے پر توجہ نہ کیجئے اور اللہ تعالیٰ پر بھروسہ کیجئے اور اللہ تعالیٰ ہی کافی وکیل ہے۔

خواتین وحضرات!
آپ نے دیکھا کہ نبی ﷺ کو اللہ تعالیٰ نے گواہی دینے والا بنا کر بھیجا ہے اس دنیا میں بھی قرآن پاک لوگوں تک پہنچایا اور اس کے لیے گواہی دی اور قیامت والے دن بھی قرآن پاک کے بارے میں گواہی دیں گے۔یہ قرآن پاک ہم پر اللہ تعالیٰ کا فضل ہے ہمیں اللہ تعالیٰ پر ہی بھروسہ کرنا چاہیے وہی ہما رے لیے کافی وکیل ہے۔بنی ﷺ اللہ تعالیٰ کی اجازت سے قر آن پاک کی طرف بلانے والے ہیں اور روشن چراغ ہیں۔

نوٹ اللہ تعالیٰ نے قرآن پاک میں فرقہ بنانے والوں سے رسول ﷺ کاتعلق ختم کردیا ہے۔ قرآن پاک میں فرقہ بنانے والے کو کافر اور منافق کہاگیا ہے۔اور ایمان والے کا مطلب ہے۔قرآن پاک کو سچ ماننا اور اس کی اطاعت کرنا۔
لہذا آیات کی تشریح یہ ہو گی۔کہ ہم نے آپﷺ کو گواہی دینے والا اور خوشخبری دینے والا اور ڈرانے والا بنا کر بھیجا ہے اور اس کی اجازت سے آپ اللہ تعالیٰ کی طرف بلانے والے ہیں اوروشن چراغ ہیں اور ایمان والوں کو خوشخبری سنا دیجئے یعنی قرآن پاک کو سچ ماننے اور اس کی اطاعت کرنے کو خوشخبری سنا دیجئے۔ کہ ان پر اللہ تعالیٰ کی طرف سے بہت بڑا فضل ہے اور کافروں اور منافقوں یعنی فرقہ پرستوں کی اطاعت نہ کریں اور ان کی تکلیف دینے پر توجہ نہ کیجئے اور اللہ تعالیٰ پر بھروسہ کیجئے اور اللہ تعالیٰ ہی کافی وکیل ہے۔

لہذا آیات کی تشریح یہ ہو گی۔فرقہ پرست رسولﷺ کو تکلیف پہنچانے والے ہیں۔ اللہ تعالیٰ نے آپﷺ کو گواہی دینے والا اور خوشخبری دینے والا اور ڈرانے والا بنا کر بھیجا ہے

اور اللہ تعالیٰ کی اجازت سے آپ اللہ تعالیٰ کی طرف بلانے والے ہیں اوروشن چراغ ہیں۔جبکہ فرقہ پرست اپنے فرقے کی طرف بلاتے ہیں۔اور رسولﷺ کے مقابلے پر کھڑے ہیں۔جبکہ بنی ﷺ اللہ تعالیٰ کی اجازت سے قر آن پاک کی طرف بلانے والے ہیں اورروشن چراغ ہیں۔ اوراس طرح قرآن پاک کے زریعے رسولﷺ قیامت تک آنے والے لوگوں کو روشن چراغ بن کر قرآن پاک کی طرف بلاتے رہیں گے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button