Entertainment

جان لیوا مذاق

جان لیوا مذاق ✍️چودھری عرفان الخالق 👇 سلمہ اور فرزانہ ڈگری کالج میں بی اے کی طالبہ تھیں ان کی بےمثال دوستی کے چرچے کالج کی ہر کلاس میں تھے دونوں ایک ساتھ کالج آتیں جاتیں بالوں کا سٹائل بات کرنے کا انداز جوتے کتب کی جلد کا رنگ غرض ہر چیز میں مماثلت ان کی دوستی کو چار چاند لگاتے، کبھی سلمہ کے گھر فرزانہ کی فیملی کی دعوت اور کبھی فرزانہ کے گھر سلمہ کی فیملی کی دعوت، دونوں میں طنز و مزاح بھی بھرپور تھا اور مذاق کا موقع کبھی ہاتھ سے جانے نہ دیتیں، ایک دن سلمہ اپنے بھائی کے ساتھ بازار گئی تو ایک دکان پہ نکلی سانپ دیکھ کر سلمہ کی مذاق والی حس پھڑک اٹھی اور کچھ سوچ کر سانپ خرید لیا گھر آ کر سلمہ نے وہ نقلی سانپ الماری میں رکھ دیا،

دوسرے دن حسب معمول کالج گئی اور فرزانہ کو اپنے گھر دعوت کا کہا، شام کو فرزانہ اپنی فیملی کے ہمراہ سلمہ کے گھر پہنچ گئی کھانا کھا کر گپ لگ رہی تھی کہ سلمہ فرزانہ کو اپنے کمرے میں لے گئی صوفے پہ بیٹھنے سے پہلے سلمہ نے پھرتی سے نقلی سانپ فرزانہ کے بیٹھنے کی جگہ رکھ دیا، فرزانہ جیسے ہی صوفہ پہ بیٹھنے لگی تو سانپ اس کے ہاتھ سے ٹکرایا اور اسکی چیخ نکل گئی سلمہ ہنسنے لگی لیکن یہ کیا فرزانہ چیخ کے بعد بالکل ساکت ہو کر صوفے پہ سر رکھ چکی تھی سلمہ نے اسے ہلایا کہ بس اُٹھ جا یار اور بتا مذاق کیسا لگا لیکن فرزانہ اب اس دنیا میں نہیں تھی شاید ۔۔؟ فوری ہسپتال لے جایا گیا وہاں جا کر ڈاکٹر نے بتایا کہ ہارٹ اٹیک کی وجہ سے موت ہوئی ایک جان لیوا مذاق نے اس لڑکی کی جان لے لی حاصل تحریر: ہنسی مذاق ضرور کریں لیکن ایسا مذاق ہرگز نہ کریں جس سے کسی کی جان عزت آبرو کو خطرہ ہو تحریر اچھی لگے تو کمنٹس باکس میں حوصلہ افزائی کرنا مت بھولیں

Chaudhry Irfan-Ul-Khaliq

یااللہ ہمیں معاف فرما آمین

Related Articles

7 Comments

  1. ماشاءاللہ جی بہت عمدہ تحریر ہے اور آپ نے آج کل معاشرے میں موجود اس غلط کام سے پردہ اٹھایا ہے ایسا ہی استہزاء اور مزاق کیا جاتا ہے
    اللہ تعالیٰ آپ کو سلامت رکھے آمین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button