Islamic

بڑی کامیابی کیسے حاصلِ ہوتی ہے

اگر ہم کسی بڑی کامیابی کو حاصلِ کرنا چاہتے ہیں تو اس میں سب سے اول چیز اخلاص اور سچی طلب ہے. جو لوگ اخلاص اور سچی طلب کے ساتھ اللہ تعالیٰ کے کام میں لگ جاتے ہیں تو ان کو دنیا میں ہی جنت کا مزہ آنے لگ جاتا ہے ایک صحابی رسول صلی اللہ علیہ وسلم ہیں حضرت انس رضی اللہ تعالیٰ عنہ جو جنگ بدر میں شریک نہیں ہوسکے تھے تو اس وجہ سے ہر وقت اپنے آپ کو ملامت کرتے رہتے تھے اور اس بات کی تمنا کرتے تھے کہ کوئی اور جنگ ہو اس میں شریک ہو کر میں اپنے حوصلے مزید بلند کر سکوں

تو جب احد کی جنگ ہوئی تو اس میں بڑے شوق اور ولولے کے ساتھ شریک ہوئے اس جنگ میں تو مسلمانوں کو اول اول فتح ہوئی تھی لیکن بعد میں ایک غلطی کی وجہ سے مسلمان مغلوب ہو کر شکست کھا گئے تھے آپ صلی اللہ علیہ وآلہ واصحابہ وسلم نے صحابہ کی ایک جماعت کو ایک مقام پر مقرر کیا اور فرمایا کہ جب تک میں نہ کہوں یہاں سے نہیں ہٹنا تو جب شروع میں فتح ہوئی تو یہ جماعت یہ سمجھ کر ہٹی کہ شاید آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے جنگ کے ختم ہونے تک حکم فرمایا تھا اس جماعت کو ہٹتے دیکھ کافروں نے واپس آکر حملہ کر دیا تو مسلمان سمبھل نہ سکے اس وقت حضرت انس رضی اللہ عنہ نے حضرت سعد بن معاذ رضی اللہ تعالیٰ عنہ کو یہ فرمایا جو سامنے سے آرہے تھے کہ اے معاذ تم کہاں جا رہے ہو اللہ کی قسم جنت کی خوشبو تو احد پہاڑ سے آرہی ہے یہ کہہ کر کافروں کی جماعت میں گھس گئے اور جب تک شہید نہیں ہوئے واپس نہیں آئے
جب شہید ہو گئے تو ان کا جسم چھلنی ہو چکا تھا اسی سے زائد زخموں کے نشانات تھے انکی بہن نے انکی انگلیوں کے پوروں سے انکو پہچانا تھا خالص اللّٰہ کے دین کیلئے جنگ میں شریک ہوئے اور شہادت کی سچی طلب تھی تو اللہ تعالیٰ نے انکی طلب کو پورا فرمایا اور شہید ہوئے لہٰذا ہر کام میں اپنی نیت خالص ہو گی تو کامیابیاں ہمارے قدم چومے گیں اللہ تعالیٰ ہم سب کو اخلاص کے ساتھ اپنے دین پر چلنے کی توفیق عطا فرمائے آمین ثم آمین تحریر :حافظ سیف الرحمن چاند

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button