Entertainment

بند ہونے کے بعد یہ دروازہ نہیں کھلے گا

بند ہونے کے بعد یہ دروازہ نہیں کھلے گا۔۔
چودھری عرفان الخالق
دنیا میں ایسا کوئی دروازہ نہیں جو بند ہونے کے بعد دوبارہ نہ کھل سکتا ہو لیکن یہاں جس دروازے کا ذکر کرنے جا رہا ہوں وہ بند ہونے کے بعد دوبارہ کبھی نہیں کھلے گا اور وہ ہے توبہ کا دروازہ
اکثر کے دماغ میں یہ سوال پیدا ہوتا ہے توبہ کا دروازہ کہاں ہے؟

ایک روایت میں آتا ہے کہ توبہ کا دروازہ مغرب کی جانب اوپر دائیں طرف ہے جس دن قیامت قائم ہو گی تو اللہ رب العزت سورج چاند اور ستاروں کو حکم دے گا کہ سب اس دروازہ میں داخل ہو جاؤ اور پھر مقرر فرشتوں کو حکم دیا جائے گا کہ اس دروازہ کو بند کر دو دروازہ بند ہونے کے بعد ایسا لگے گا کہ یہاں کبھی دروازہ تھا ہی نہیں، اس دروازے کے ایک طاق سے دوسرے طاق تک کی مصافت اتنی زیادہ ہے کہ عربی نسل کا گھوڑا 40 سال تک دوڑتا رہے تو بھی دوسرے طاق تک نہ پہنچ پائے اس سے اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ دونوں طاقوں کا درمیانی فاصلہ کتنا زیادہ ہو گا اور عربی نسل کا گھوڑا دنیا کے سب گھوڑوں سے تیز رفتار ہوتا ہے سب سے اہم اور ضروری بات یہ دروازہ ابھی تک کھلا ہے اور روز قیامت تک کھلا رہے گا، مطلب ابھی ہم اپنے گناہوں اور بد اعمالیوں پر توبہ کر سکتے ہیں ابھی موت تک توبہ کی مہلت ہے

مرنے سے پہلے اپنے گناہوں پر توبہ کر لی جائے مرنے کے بعد ہم روز قیامت ہی اٹھائے جائیں گے اور تب تک توبہ کا دروازہ بند ہو چکا ہو گا اور موت کا وقت مقرر نہیں کسی دن کسی پل بھی آ سکتی ہے،
رات کو سونے سے پہلے اللہ سے اپنے گناہوں پر توبہ کر کے اور سب کو معاف کر کے سویا جائے
اللہ سے دعا ہے کہ ہمیں مرنے سے پہلے توبہ کی توفیق عطا فرمائے آمین ثم آمین

Chaudhry Irfan-Ul-Khaliq

یااللہ ہمیں معاف فرما آمین

Related Articles

5 Comments

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button