Freelancing

ای کامرس اور ہمارے کاروباری مسائل

آج کی دنیا نا صرف گلوبل گاوں بن چکی ہے بلکہ ڈیجیٹل بھی بن رہی ہے اب ہمارا ہرکام ایک کلک پر ہورہا ہے چاہے داخلہ ہو یا یوٹیلٹی بل ہوں یا پھر کاروبار ہی کیوں نا ہو سب کچھ ایک کلک کی مار ہے ۔ اس کی وجہ سے جہاں سہولیات میں اضافہ ہوا ہے وہاں کچھ مسائل بھی پیدا ہوئے ہیں اور ہمارا ملک جہاں ٹیکنیکل تعلیم کی کمی کی وجہ سے ہمارا کاروباری طبقہ بری طرح متاثر ہورہا ہے۔
ہم اکثر کاروباری لوگوں سے سنتےہیں کہ آج کل کاروبار مندے کا شکار ہے جبکہ دوسری جانب بہت سے ایسے کاروباری لوگ بھی ہیں جو لاکھوں روپے ماہانہ کمارہے ہیں تو جن کے کاروبار مندے کا شکار ہیں اس کی کیا وجہ ہے اور جن کے کاروبار ترقی کررہے اس کی وجہ کیا ہے؟ اس کا بہت آسان جواب ہے کہ کرونا میں ایمازون جو دنیا کی سب سے بڑی ای کامرس کمپنی ہے اس نے صرف چھ ماہ میں پانچ ارب ڈالر منافع کمایا ہے جبکہ ساری دنیا کے کاروبار چھ ماہ تک نا صرف بند رہے بلکہ عالمی مارکیٹ منفی میں چلی گئی اور تیل رکھنے کے لیے جگہ ہی نا رہی اور تیل پیدا کرنے والی کمپنیاں سستے داموں پٹرولیم مصنوعات بیچنے پر مجبور ہوگئیں۔
ہمارے ملک میں جو لوگ ای کامرس کے ساتھ منسلک ہورہے ہیں وہ اچھا منافع کما رہے ہیں اور جو لوگ پرانے روایتی طریقوں سے لوگوں کو لوٹنے کے چکر میں ہیں وہ ہاتھ پہ ہاتھ دھرے بیٹھے ہیں۔ دوسال پہلے کی بات ہے ہمارے خاندان میں ایک شادی تھی تو ہم نے سوچا کہ لڑکی کو ایک ڈنر سیٹ لے کر دے دیتے ہیں بازار سے پتا کیا تو 7500سے کم ڈنر سیٹ نہیں مل رہا تھا ہم نے دراز سے پتا کیا تو اسی طرح کا سیٹ ہمیں کراچی سے صرف پانچ ہزار میں گھر پہنچ گیا اور وہ سیٹ مقامی مارکیٹ سے کوالٹی میں بھی بہت بہتر تھا اور ہمیں پچیس سو روپے کی بچت بھی ہوئی۔
اب دوکام ہونے جارہے ہیں ایک تو آرگینک پیداوار ہورہی ہے اور کیمیکل کا استعمال ختم ہورہا ہے اور دوسرا جو لوگ غیرمعیاری اشیاء فروخت کرتےہیں وہ بھی مارکیٹ سے باہر ہونے جارہے ہیں کیونکہ ای کامرس میں ریٹنگ بہتر بنانے کے لیے اپنی کوالٹی بہتر کرنا بہت ضروری ہوچکا ہے تو میری پاکستانی کاروباری برادری کو نصیحت ہے کہ اب روایتی کاروبار کے طریقے چھوڑ کر جدید طریقے اپنائیں اور سب سے اہم بات غیرمعیاری اشیاء نا بیچیں ورنہ آج کے کاروباری کل کے مزدور بھی بن سکتے ہیں تو دیر مت کریں اور خود کو روایتی طریقوں کے ساتھ ای کامرس سے بھی منسلک کریں
عبدالرحمن شاہ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button